والد نے بچے کو ماں سے زبردستی چھین لیا،ایس ایچ اوکالوخان عدالت طلب

شعیب جمیل

پشاورہائیکورٹ نے چارسالہ بچے کی ریکوری سے متعلق درخواست پر مختصر فیصلہ جاری کرکے صوابی پولیس کو بچہ بازیاب کروانے اور عدالت میں پیش کرنے کا حکم جاری کردیا ۔ پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس اشتیاق ابراہیم اور جسٹس صاحبزادہ اسد اللہ پر مشتمل دورکنی بنچ نے صوابی کالو خان میں چار سالہ بچے کی ریکوری سے متعلق درخواست مختصر فیصلہ جاری کردیا ، تحریری فیصلے میں عدالت نے ڈی پی او صوابی اور ایس ایچ او تھانہ کالوخان کو بچہ بازیاب کرانے اور عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیدیا ہے اور قرار دیا کہ اگلی سماعت پر ایس ایچ او تھانہ کالو خان خود پیش ہو اور بچے کو بھی پیش کریں ۔ عدالت نے فیصلے میں لکھا ہے کہ بچے کا والد بچے کو باہر ملک لے جانے کی کوشش کررہاہے ۔ ا ایف آئی اے حکام بچے کو بیرون ملک لے جانے کی اجازت نہ دے اور اس مختصرفیصلے کی کاپی ڈائریکٹر ایف آئی کو ارسال کی جائے ۔ دوران سماعت عدالت میں درخواست گزار کے وکیل محمد عارف فردوس نے بتایا کہ چارسالہ بچے آدم اقبال کو ماں سے زبردستی چھین لیاگیا، اس حوالے سے متاثرہ خاتون نے صوابی کی مقامی عدالت میں بچے کی ریکوری کیلئے درخواست دی تھی،جو کہ خارج ہوچکی ہے، جس کے خلاف گزار گوار نے ہائیکور ٹ میںرٹ دائر کی ، لہذا ہائیکور ٹ بچے کو والدسے بازیاب کرکے والدہ کے حوالے کریں، عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر ریکوری کے لیے دائر اپیل پر مختصر فیصلہ جاری کردیا ، عدالت نے اپیل پر مزید سماعت 12 دسمبر تک ملتوی کردی ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Fill out this field
Fill out this field
براہ مہربانی درست ای میل ایڈریس درج کریں۔
You need to agree with the terms to proceed